قیامت کی نشانیاں

Qayamat ki Nishaniyan

(Qayamat ki Nishaniyan) قیامت کی نشانیاں

قیامت (Qayamat) کےآنےسےپہلےدنیاسےعلم اٹھ جائےگا۔ عالم باقی نہ رہیں گے۔ جہالت پھیل جائےگی۔
بدکاری اوربےحیائی زیادہ ہوگی۔ عورتوں کی تعداد مَردوں سےبڑھ جائےگی۔ بڑےدجّال (دجّال (Dajjal) کالغوی معنی جھوٹا،سچائی کوچھپانےوالا۔
روایت کےمطابق ایک جھوٹاشخص جواخیرزمانہ میں پیداہوگامسلمانوں کےعقیدہ کےمطابق حضرت عیسٰی علیہ السلام اسےقتل کریں گے۔)سواتیس دجّال اورہوں گےہرایک ان میں سےنبوت کادعویٰ کرےگاباوجودیکہ خضورپُرنورسیِّدالانبیاء ﷺ پرنبوت ختم ہوچکی۔
ان میں سےبعضےدجّال توگزرچکےجیسےمسیلمہ کذّاب،اسودعنسی،مرزاعلی محمدباب،مرزاعلی حسین بہاءاللہ،مرزاغلام احمدقادیانی بعضےاورباقی ہیں وہ بھی ضرورہوں گے۔

مال کی کثرت

مال کی کثرت ہوگی۔ عرب میں کھیتی، باغ ،نہریں ہوجائیں گی۔ دین پرقائم رہنامشکل ہوگا۔ وقت بہت جلدگزرےگا۔ زکٰوۃ دینالوگوں کودشوارہوگا۔
علم کولوگ دنیاکیلئےپڑھیں گے۔ مرد،عورتوں کی اطاعت کریں گے۔ماں باپ کی نافرمانی زیادہ ہوگی۔
شراب نوشی عام ہوجائےگی۔ نااہل سرداربنائےجائیں گے۔
نہرفرات سےسونےکاخزانہ کھلےگا۔ زمین اپنےدفینے اُگل دےگی۔ امانت، غنیمت سمجھی جائے گی۔ مسجدوں میں شورمچیں گے۔ فاسق ،سرداری کریں گے۔
فتنہ انگیزوں کی عزت کی جائےگی۔ گانےباجےکی کثرت ہوگی۔ پہلے بزرگوں پرلوگ لعن طعن  (برابھلا) کریں گے۔
کوڑےکی نوک اورجوتےکےتسمےباتیں کریں گے۔
دَجّال اوردَابَّۃُ الارض اوریاجُوج ماجُوج نکلیں گے۔ حضرت امام مہدی رضی اللہ تعالٰی عنہ ظاہرہوں گے۔ حضرت عیسیٰ علیہ السلام نزول  (اترنا، یعنی آسمان سےاتریں گے) فرمائیں گے۔آفتاب(سورج) مغرب سےطلوع ہوگااورتوبہ کادروازہ بندہوجائےگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں