توبہ کے بعد پھر گناہ سرزد ہوجائے تو کیا کرے؟

جس شخص نے صدقِ دل سے توبہ کرلی ہو پھر وہ دانستہ یا نادانستہ طور پر غلبہ شہوت وغیرہ کی وجہ سے کسی گناہ کا مرتکب ہوجائے تو اسے چاہيے کہ دوبارہ توبہ کرنے میں دیر نہ کرے کیونکہ بعد ِ توبہ گناہ کا صدور ایک مصیبت ہے تو دوبارہ توبہ نہ کرنا اس سے…

اگر توبہ کرنے کے بعد دل دوبارہ گناہوں کی طرف مائل ہوتو؟

توبہ کے بعدگناہوں کی طرف میلان ہونا یقینا بہت بڑی آزمائش ہے ۔ انسان کو چاہيے کہ اس میلان پر قابو پانے کے لئے اپنے گناہوں کو پیش ِ نظر رکھے اوردل میں ندامت کی آگ کو جلائے رکھے ،اس کی تپش نفس کی خواہشات کا قلع قمع کردے گی ،ان شاء اللہ عزوجل۔اس سلسلے…

توبہ کرنے کے بعد کیا کِیا جائے کہ بندہ استقامت حاصل کر سکے؟

سب سے پہلا کام یہ کرے کہ کسی طرح گناہوں کی معرفت حاصل کرے تاکہ مستقبل میں کسی قسم کے گناہ کے ارتکاب سے بچ سکے ۔پھر ان گناہوں سے مکمل پرہیز کرے اور ہر اس کام سے بچے جو گناہ کی طرف لے جانے والا ہو ۔ اس کے علاوہ کثرت سے نیکیاں کرنے…

جانیئے توبہ کا طریقہ، اسکی شرائط اور سچی توبہ کسے کہتے ہیں؟

توبہ کابہترین طریقہ یہ ہے کہ گناہ کے بعدوضوکرے اوردو رکعت نماز صلوۃ التوبہ کی نیت سے پڑھے پھر اپنے گناہوں پرشرمندہ ہوکرخداسے یہ عہدکرے کہ میں اب کبھی بھی یہ گناہ نہ کروں گاپھر اس توبہ پر قائم رہے اور اس گناہ کے قریب نہ جائے اور خدا عزوجل سے اپنے گناہ کی بخشش…