ایک عورت کا اللہ پر بھروسہ(حکایت)

اللہ پر بھروسہ

ایک زاہد شخص کا بیان ہے کہ میں حج کرنے کے لئے اپنے گھر سے روانہ ہوا۔ تو میں نے راستہ میں ایک عورت دیکھی جو بغیر زادے راہ اور سواری کے پیدل اللہ پر بھروسہ کرے کے چلتی جارہی تھی ۔ اور ذکر الٰہی میں مصروف تھی۔

اللہ پر بھروسہ

میں نے اس کے قریب ہو کر کہا: اے اللہ کی بندی کہاں جانے کا ارادہ ہے؟۔ وہ بولی :اللہ کے گھر خانہ کعبہ میں، میں نےکہا: تمہارے پاس سفر کا سامان اور سواری نہیں دکھ رہی ۔ وہ بولی: اگر تم میں سے کوئی شخص دعوت پکائے اور لوگوں کو بلائے۔

کیا اس کے مہمانون کے لئے یہ بات اچھی ہو گئی کہ وہ اپنا کھانا ساتھ لائیں۔ میں نے کہا : نہیں، پھر اس عورت نے کہا: اللہ پاک کی ضیافت اس سے زیادہ حق رکھتی ہے۔ پھر وہ ہمارے ساتھ آئی اور پتھریلی زمین پر اتری اور کہتی تھی: میرے رب کا گھر کہاں ہے؟ اس سے کہا گیا کہ ابھی تھوڑی دیر بعد تو اسے دیکھ لے گی۔

جب وہ مسجد حرام داخل ہوئی تو اس سے کہا گیا کہ یہی تیرے رب تعالیٰ کا گھر ہے۔ اس نے اپنا سر کعبہ کی چوکھٹ پر رکھا اور بار بار یہ کہتی تھی : یہ میرے رب کا گھر ہے۔ حتی کہ اس کی آواز بیٹھ گئی۔ جب ہم نے اس کی طرف دیکھا تو وہ فوت ہو چکی تھی۔

توجہ فرمائیں! اس ویب سائیٹ میں اگر آپ کسی قسم کی غلطی پائیں تو ہمیں ضرور اطلاع فرمائیں۔ ہم آپ کے شکر گزار رہیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں